بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

10 شوال 1441ھ- 02 جون 2020 ء

دارالافتاء

 

مسافر امام نے چار کی نیت سے نماز شروع کی اور دو پر سلام پھیر دیا


سوال

اگر مسافر امام نے چار کی نیت سے نماز تو شروع کی، لیکن دو پر سلام پھیر دیا، اس کا کیا حکم ہے؟

جواب

نماز درست ہے؛ اس لیے کہ مسافر جب انفرادی نماز پڑھ رہا ہو یا امام ہو تو اس صورت میں چار رکعات والی فرض نماز دو  رکعات پڑھنا ہی لازم ہے، پوری نماز پڑھنا درست نہیں اگر چار کی نیت کرلے تب بھی دو ہی پڑھنا ضروری ہے، دل ہی دل میں نیت کی تصحیح  کرلے۔ (ماخوذ از نماز کے مسائل کا انسائیکلو پیڈیا 62/4 بحوالہ شامی) فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144107200173

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں

ہماری ایپلی کیشن ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے