بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

13 شوال 1445ھ 22 اپریل 2024 ء

دارالافتاء

 

موبائل اکاؤنٹ پر ملنے والی اضافی رقم کا حکم


سوال

موبائل اکاؤنٹ پر اضافی رقم ملتي ہے ، وه جائز ہے یا نہیں؟

جواب

موبائل اکاؤنٹ سے مراد اگر ایزی پیسہ یا جاز کیش وغیرہ اکاؤنٹ ہیں تو اگر ان اکاؤنٹ میں مخصوص رقم رکھنے کی شرط پر مشروط نفع  (اضافی رقم)  ملتا ہو تو اس کا استعمال جائز نہیں ہوگا، یہ قرض پر نفع ہے جو کہ سود ہے۔

تفصیل کے لیے درج ذیل لنک پر جامعہ کا فتوی ملاحظہ فرمائیں :

ایزی پیسہ کیش بیک اور روزانہ ملنے والی سہولیات کا حکم

فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144207201554

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں