بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

12 ذو القعدة 1441ھ- 04 جولائی 2020 ء

دارالافتاء

 

میاں بیوی کا ایک دوسرے کے پورے جسم کودیکھنے اور چھونے کاحکم


سوال

محترم مفتی صاحب میرا مسئلہ یہ ہے کہکیامیاں بیوی ایک دوسرے کے جسم کے سارے حصوں کودیکھ اور چھوسکتے ہیں یا اس میں کوئی قباحت یا شرعی روک ہے؟ از راہِ کرم جواب عنایت فرمادیں۔

جواب

میاں بیوی کے لیے ایک دوسرے کے مکمل جسم کودیکھنا اورچھوناجائزہے۔ البتہ حیا کاتقاضا یہ ہے کہ اعضاءِ مستورہ سے نگاہ پست رکھی جائے۔ حضرت عائشہ رضی اللہ عنھا فرماتی ہیں کہ ساری زندگی نہ تومیں نے رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم کا مستورحصہ دیکھا اورنہ ہی آپ صلی اللہ علیہ وسلم نے میرا مستورحصہ دیکھا۔ فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 143504200010

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں