بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

9 محرم 1446ھ 16 جولائی 2024 ء

دارالافتاء

 

دو بیٹیوں کے درمیان تقسیم میراث


سوال

صرف دو بیٹیاں ہونے کی صورت میں عورت کی میراث کیسے تقسیم ہوگی؟ جب کہ شوہر حیات ہے، عورت کے والدین فوت ہو چکے ہیں، البتہ بھائی بہن حیات ہیں۔

 

جواب

صورت مسئولہ میں اگر مرحومہ کی صرف دو بیٹیاں ہیں بیٹے نہیں ہیں، اور شوہر بھی حیات ہے اور بھائی بہن بھی ہیں تو مرحومہ کے  شوہر کو چوتھائی حصہ اور اس کی دونوں بیٹیوں کوایک ایک  تہائی حصہ  ملے گا  اور باقی رہ جانے والا حصہ  بھائی بہنوں کو  ملے گا۔

اگر مرحوم کے بھائی بہنوں کی تعداد لکھ کر ارسال کر دی جائے تو مکمل  صورت تقسیم بتا دی جائے گی۔  فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144507101711

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں