بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

10 ذو القعدة 1442ھ 21 جون 2021 ء

دارالافتاء

 

مینڈک کھانا حلال ہے یا حرام


سوال

 جناب مفتی صاحب، میں سنگاپور میں رہتا ہوں اور یہاں لوگوں کی مختلف عادتیں ہیںِ ، بشمول مسلمانوں کے کہ یہ لوگ سانپ، کیکڑا، مختلف مچھلیاں اور مینڈک وغیرہ کھاتے ہیں، میں بالخصوص مینڈک کے بارے میں جاننا چاہتا ہوں کہ اس کا کھانا حلال ہے یا نہیں؟ میں نے پڑھا کہ رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے کسی حدیث میں مینڈک کو مارنے سے منع فرمایا ہے، لیکن مجھے اس کی صحت کا پتہ نہیں ہے۔ میری رہنمائی فرمائیں۔

جواب

فقہ حنفی کی رو سے سمندری دریائی جانوروں میں سے صرف مچھلی کھانا حلال ہے، مینڈک مچھلی کی قسم نہیں ہے، اس لیے مینڈک کھانا حلال  نہیں ہے، جس حدیث کا آپ نے تذکرہ کیا ہے ہمارے علم اور تلاش کے مطابق ایسی کوئی روایت نہیں ہے۔ فقط واللہ اعلم

 


فتوی نمبر : 143101200001

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں