بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

16 شوال 1445ھ 25 اپریل 2024 ء

دارالافتاء

 

ماسک پہن کر نماز پڑھانا


سوال

آج کل کے حالات چل رہیں کورونا سے متعلق تو ان حالات میں ماسک کے ساتھ اگر نماز پڑھائی جائے چوں کہ حکومت نے اس کی پابندی لگائی ہے تو کیا اس سے نماز مکروہ ہوگی یا  نہیں؟

جواب

عام حالات میں نماز کے دوران چہرہ چھپا کر یا ماسک پہن کر نماز ادا کرنا مکروہِ تحریمی ہے، تاہم موجودہ حالات میں احتیاطی تدابیر کے طور پر ماسک پہن کر نماز پڑھنا یا پڑھانامکروہ نہ ہوگا،  تاہم یہ حکم اس وقت تک ہے جب تک مذکورہ وبائی مرض ختم نہ ہوجائے۔

مزید تفصیل کے لیے دیکھیے:

کرونا وائرس سے حفاظت کے لیے ماسک پہن کر نماز ادا کرنا

فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144109200591

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں