بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

20 صفر 1443ھ 28 ستمبر 2021 ء

دارالافتاء

 

مسجد کے وضوخانہ بنانے میں شریک ہونا


سوال

مسجد کے پاس جو استنجا خانہ یا وضو خانہ ہوتا ہے ،اس میں اس نیت سے کام کرے کہ وضو خانہ بنانے میں ہاتھ بٹاؤں گا تو ثواب ملے گا، کیا ایسا کرنا درست ہے ؟

جواب

مسجد کا وضو خانہ یا استنجاخانہ، مسجد کی ضروریات میں شامل ہیں ، اس لیے اگر کوئی شخص مسجد کے وضو خانے یا استنجا خانہ کی تعمیر میں ثواب کی نیت سے شریک ہوتا ہے تو ان شاء اللہ اسے اس کاثواب حاصل ہوگا۔ فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144211200671

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں