بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

11 ربیع الاول 1442ھ- 29 اکتوبر 2020 ء

دارالافتاء

 

ذبح شدہ اور مری ہوئے گائے کے دودھ کا حکم


سوال

گامیش یا گائے جب مرجائے تو اس کا دودھ نکالنا پھر پینا  یہ حلال ہے یا حرام؟

جواب

گائے کے ذبح ہونے یا مرجانے کے بعد اس کے تھن میں موجود دودھ پاک ہے، اس کا پینا حلال ہے۔

الفتاوى الهندية (5/ 339):
"البيضة إذا خرجت من دجاجة ميتة أكلت، و كذا اللبن الخارج من ضرع الشاة الميتة، كذا في السراجية".

الدر المختار وحاشية ابن عابدين (رد المحتار) (1/ 206):
"وكذا كلّ ما لاتحلّه الحياة حتى الإنفحة واللبن على الراجح.
(قوله: على الراجح) أي الذي هو قول الإمام، ولم أر من صرّح بترجيحه، ولعلّه أخذه من تقديم صاحب الملتقى له وتأخيره قولهما كما هو عادته فيما يرجحه. وعبارته مع الشرح: وإنفحة الميتة ولو مائعة ولبنها طاهر كالمذكاة خلافًا لهما لتنجسهما بنجاسة المحل. قلنا: نجاسته لاتؤثر في حال الحياة؛ إذ اللبن الخارج من بين فرث ودم طاهر فكذا بعد الموت. اهـ". فقط والله أعلم


فتوی نمبر : 144108201237

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں