بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

- 26 مئی 2020 ء

دارالافتاء

 

لپ اسٹک کا حکم


سوال

 لپ اسٹک کس مواد سے تیار ہوتی ہے?

جواب

یہ ویب سائٹ شرعی مسائل کے حوالے سے راہ نمائی کے لیے مختص ہے۔ لپ اسٹک کے اجزائے ترکیبی کیا ہیں؟ اس کا تعلق  شرعی مسائل سے نہیں ہے، البتہ جن اجزاء سے وہ تیار ہو اس کے بعد اس کا استعمال کرنا جائز ہے یا ناجائز ہے، یہ شرعی مسئلہ ہے.

لہذا اگر  ’’لپ اسٹک‘‘  میں کوئی حرام یا ناپاک چیز کی آمیزش نہ ہو تو استعمال کرنا جائز ہے، اگر تحقیق سے ثابت ہوجائے کہ کسی   لپ اسٹک میں حرام یا ناپاک اجزا شامل  ہیں تو  اس کا لگانا جائز نہیں ہوگا۔فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144108200734

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں

ہماری ایپلی کیشن ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے