بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

8 شوال 1445ھ 17 اپریل 2024 ء

دارالافتاء

 

خطبۂ نکاح چپل پہن کر دینا


سوال

کیا خطبۂ  نکاح چپل پہن کر دے سکتے ہیں؟ کیا اگر کسی نے جوتے چپل پہن کر خطبہ نکاح دیا تو نکاح ہوگا یا نہیں اور ایسا جائزسمجھ کر کرنا گناہ ہوگا یا نہیں؟


جواب

صورت مسئولہ میں پاک چپل پہن کر نکاح کا خطبہ دینا جائز ہے،  گناہ نہیں ہے ، باقی بہتر نہیں ہے، کیوں کہ   عرف  میں اس کو اچھا نہیں سمجھا جاتا ۔

فتاویٰ شامی میں ہے:

"(قوله: و صلاته فيهما) أي في النعل و الخف الطاهرين أفضل؛ مخالفةً لليهود، تتارخانية.

و في الحديث: "«صلوا في نعالكم، و لاتشبهوا باليهود» رواه الطبراني كما في الجامع الصغير رامزًا لصحته. و أخذ منه جمع من الحنابلة أنه سنة، و لو كان يمشي بها في الشوارع؛ لأنّ النبي صلى الله عليه وسلم و صحبه كانوا يمشون بها في طرق المدينة ثم يصلون بها.

قلت: لكن إذا خشي تلويث فرش المسجد بها ينبغي عدمه و إن كانت طاهرةً. و أما المسجد النبوي فقد كان مفروشًا بالحصى في زمنه صلى الله عليه وسلم بخلافه في زماننا، و لعل ذلك محمل ما في عمدة المفتي من أن دخول المسجد متنعلًا من سوء الأدب، تأمل."

( باب ما يفسد الصلاة، وما ويكره فيها 1 / 657،، ط: سعید)

فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144311101516

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں