بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

15 محرم 1446ھ 22 جولائی 2024 ء

دارالافتاء

 

کیا قرض دار پر قربانی واجب ہے؟


سوال

کیا قرض دار پر قربانی واجب ہے؟

جواب

صورتِ مسئولہ میں اگر قرض دار شخص کے پاس اتنامال ہو کہ اپنا قرض اد اکرنے کے بعد بھی وہ نصاب کا مالک رہتاہے یعنی نصاب اس کےحوائجِ اصلیہ سے زائدہو،تواس صورت میں اس پر قربانی واجب ہوگی ورنہ نہیں۔

فتاوی شامی میں ہے:

"وشرائطها: الإسلام والإقامة واليسار الذي يتعلق به) وجوب (صدقة الفطر)۔۔۔۔۔
(قوله واليسار إلخ) بأن ملك مائتي درهم أو عرضا يساويها غير مسكنه وثياب اللبس أو متاع يحتاجه إلى أن يذبح الأضحية."

(الدر المختار مع رد المحتار،کتاب الاضحیہ،312/6،ط:سعید)
فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144511102221

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں