بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

4 شوال 1445ھ 13 اپریل 2024 ء

دارالافتاء

 

کسی ایک شریک کا اپنی دکان کا کرایہ بھی وصول کرنا


سوال

 دوشریک ہیں کاروبار میں ایک کا حصہ 75فیصد ہے اور دوسرے کا 25فیصد ہے اب 25فیصد والا محنت کرتا ہے منافع نصف نصف ہے اور75فیصد والا دکان کا کرایہ بھی لیتا ہے اب دکان کا کرایہ لینا اس  کے لیے جائز ہے کہ نہیں ؟

جواب

مذکورہ کاروبار میں دکان کا مالک بھی شریک ہے، لہٰذا شریک کا اپنی ہی دکان کا کرایہ لینا شرعًا جائز نہیں، اس کی صحیح متبادل صورت یہ ہے کہ دکان کا مالک باہمی رضامندی سے اپنے نفع کے تناسب میں کچھ اضافہ کرلے۔فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144107200586

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں