بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

4 جُمادى الأولى 1444ھ 29 نومبر 2022 ء

دارالافتاء

 

کرایہ کے مکان میں لگے درختوں سے پھل کھانا


سوال

کرایہ کے مکان میں انگور ہوں تو  کیاکرایہ دار کے لیے انگور کھاناجائز ہے؟

جواب

صورتِ مسئولہ میں اگر درخت کے پھلوں سے متعلق کوئی معاہدہ نہیں ہوا تو  کرایہ دار کے لیے اس درخت سے پھل کھانے کی اجازت نہیں ہے،ان درختوں پر لگے پھلوں پر مالک مکان کو تصرف کا حق حاصل ہے، اور وہی اس کا مالک ہے، البتہ کرایہ دار ، مالک کی اجازت سے کھاسکتاہے۔

المحیط البرہانی فی الفقہ النعمانی میں ہے:

"وأما إذا كانت الثمار على الأشجار فالأفضل أن لا يأخذ في موضع ما إلا بإذن."

(‌‌‌‌كتاب الاستحسان والكراهية،الفصل الثاني عشر في الكراهية في الأكل،ج5،ص352،ط؛دار الکتب العلمیہ)

فقط واللہ اعلم 


فتوی نمبر : 144310101386

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں