بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

12 ذو القعدة 1445ھ 21 مئی 2024 ء

دارالافتاء

 

کرائے پر دی ہوئی زمین آفت سماوی کی وجہ سے ہلاک ہونے کی صورت میں ضمان کا حکم


سوال

اجارہ پر دی ہوئی  زمین  اگر آفتِ سماوی سے ہلاک ہوجائے، مثلًا اس پر دریا کا رخ ہوجائے تو ضمان کس پر  ہوگا مالک پر یا کرائے دار پر؟

جواب

اجارہ  (کرائے)  پر دی ہوئی زمین اگر آفتِ  سماوی سے تباہ ہوجائے تو اس کا ضمان کرائے دار پر نہیں آئے گا، لہٰذا اگر اس کی غفلت و لاپرواہی کے بغیر  آفتِ سماوی کی وجہ سے اس زمین کو کوئی نقصان پہنچ جائے تو اس کا ضمان اس کے ذمہ نہیں آئے گا، بلکہ زمین کا مالک خود اپنی زمین کے نقصان کا ذمہ دار ہوگا۔ فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144201200463

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں