بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

14 ذو القعدة 1445ھ 23 مئی 2024 ء

دارالافتاء

 

کیا اعتکاف میں سگریٹ پی سکتے ہیں ؟


سوال

کیا اعتکاف میں سگریٹ پینے کی اجازت ہے ؟

جواب

واضح رہے کہ مسجد کو بدبو دار چیزوں سے پاک رکھنے کا حکم ہے اور اعتکاف مسجد میں کیا جاتا ہے، لہٰذا معتکف کے لیے مسجد کے اندر سگریٹ پینا مکروہ ہے، اور اگر معتکف سگریٹ پینے کے لیے مسجد سے باہر جائے گا تو اس کا اعتکاف فاسد ہوجائے گا، البتہ اگر کوئی معتکف قضائے حاجت کے لیے بیت الخلا جائے اور قضائے حاجت کے دوران ہی سگریٹ  پی لے تو یہ جائز ہے تاہم مسجد میں واپس  آنے سے پہلے منہ کی بدبو  دور کر کے واپس آئے۔

 مسلم  شریف میں ہے:

"عن جابر بن عبد الله، عن النبي صلى الله عليه وسلم؛ قال: من ‌أكل ‌من ‌هذه، ‌البقلة، الثوم (وقال مرة: من أكل البصل والثوم والكراث) فلا يقربن مسجدنا. فإن الملائكة تتأذى مما يتأذى منه بنو آدم."

(کتاب المساجد،‌‌ باب نهي من أكل ثوم أو بصلا أو كراثا أو نحوها ،ج:1، ص:395،رقم الحدیث:364 ط:دار إحياء التراث العربي)

فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144509102126

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں