بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

9 صفر 1443ھ 17 ستمبر 2021 ء

دارالافتاء

 

کیا اذان کے دوران عورت کو سر ڈھانپنا ضروری ہے؟


سوال

کیا اذان کے ٹائم عورت کے لیے سر ڈھانپنا ضروری ہے؟ اگر نہ ڈھانپے تو گناہ ہوگا؟

جواب

اذان کے وقت عورت کے لیے سر ڈھانپنا ضروری نہیں، لہذا اگر کوئی خاتون اذان کے وقت سر نہ ڈھانپے تو وہ گناہ گار نہ ہوگی،  لیکن احترامِ اذان کی وجہ سے اس کا اہتمام کرلینا اچھی عادت ہے۔  فقط واللہ اعلم

مزید تفصیل کے لیے درج ذیل لنک ملاحظہ کیجیے:

عورتوں کا اذان کے وقت سر پر دوپٹہ رکھنا


فتوی نمبر : 144209201961

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں