بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

12 جُمادى الأولى 1444ھ 07 دسمبر 2022 ء

دارالافتاء

 

کلالہ کے ورثہ میں بھتیجی اور چچا زاد بھائی ہو تو تقسیم کیسے ہوگی؟


سوال

کلالہ کی وفات کے بعد بھتیجی اور چچا زاد بھائی کا حصہ کیا ہوگا؟

جواب

صورتِ  مسئولہ میں  بھتیجی کو اس صورت میں حصہ ملے گا جب کہ اس کا والد کلالہ کی وفات کے وقت حیات ہو، بصورتِ  دیگر کلالہ  کے مکمل ترکہ کا حق دار چچازاد بھائی ہوگا۔

لہٰذا اگر کلالہ کی وفات کے وقت مذکورہ بھتیجی کے والد حیات تھے تو ان کے ورثہ کی تفصیل بتاکر حصے معلوم کیے جاسکتے ہیں۔فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144211201046

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں