بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

11 صفر 1443ھ 19 ستمبر 2021 ء

دارالافتاء

 

کیاعورت کا کفن سیا جاسکتا ہے؟


سوال

کیا عورت کے کفن کی سلائی کی جا سکتی ہے؟

جواب

کفن مرد کا ہو یا عورت کا اسے سلائی کرنا غیر ضروری کام ہے، نیز زندوں کے لباس کی طرح میت کا کفن سینا سنت سے ثابت بھی نہیں ہے۔ 

المحيط البرهاني في الفقه النعماني (2/ 172) :

"ولنا حديث ابن عباس -رضي الله عنهما- أن النبي عليه السلام: «كفن في حلة وقميص»، والحلة اسم للثوبين عند العرب، رداء و إزار و لأن أشرف لباس الأحياء القميص، فوجب تقديمه إلا أنه لايجعل قميصه على سنة قميص الأحياء، فلايجعل له دخريض؛ لأن ذلك إنما يجعل في حق الحي ليتسع أسفله فيتيسر له المشي، والميت لايحتاج إلى ذلك، ولايجعل له الجيب أيضاً، لأن ذلك يفعل للحي ولا حاجة للميت إلى ذلك، ولايكف أطرافه، لأن ذلك للصيانة و لا حاجة إليه في حق الميت."

(کتاب الصلاۃ، الفصل الثانی والثلاثون فی الجنائز،ط: دارالکتب العلمیۃ بیروت)

فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144204200356

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں