بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

7 ربیع الثانی 1441ھ- 05 دسمبر 2019 ء

دارالافتاء

 

جہاد کب فرض ہوتا ہے؟


سوال

السلام علیکم۔ کیا جہاد فرض عین ہو چکا ہے؟؟ برائے مہربانی اس کے آج کے دور سے متعلق احکام واضح فرما دیں۔ جزاک اللہ تعالی۔

جواب

دفاعی جہاد صرف اس صورت میں فرض عین ہوتا ہے جب کہ امام المسلمین کی طرف سے نفیر عام کا حکم ہوجائے کہ سب جہاد کے لیے نکلیں۔ اور جب تک نفیر عام نہ ہو، دین کے دیگر شعبوں درس و تدریس، دعوت و تبلیغ وغیرہ کی طرح جہاد بھی فرض کفایہ رہتا ہے۔


فتوی نمبر : 143410200028

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاشں

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے یہاں کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے

سوال پوچھیں

ہماری ایپلی کیشن ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے