بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

13 جُمادى الأولى 1444ھ 08 دسمبر 2022 ء

دارالافتاء

 

جانور کا نتھنا کٹ گیا ہو تو اس کی قربانی کا حکم


سوال

جس جانور کا ناک کا نتھنا، رسی باندھنے کی جگہ درمیان میں سے کٹی ہوئی ہو، اس کی قربانی کا کیا حکم ہے ؟

جواب

صورتِ مسئولہ میں   قربانی کے جانور کی ناک  کے نتھنے میں  رسی باندھنے کی وجہ سے کٹ لگ گیا ہو تو اس کی قربانی جائز ہے، البتہ اگر ناک ہی کٹ گئی تو پھر اس کی قربانی جائز نہیں ہوگی۔

الدر المختار وحاشية ابن عابدين (رد المحتار) (6 / 323):

"(والجذاء) مقطوعة رءوس ضرعها أو يابستها، ولا الجدعاء: مقطوعة الأنف"

فقط والله اعلم


فتوی نمبر : 144212200733

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں