بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

13 صفر 1442ھ- 01 اکتوبر 2020 ء

دارالافتاء

 

حاملہ عورت کے لیے اعمال


سوال

حالتِ حمل میں عورت کے لیے کوئی مخصوص عمل ہے یا نہیں؟ ہر ماہ میں الگ الگ سورہ پڑھنے کا کوئی عمل ہے؟

جواب

شرعاً حاملہ عورت کے لیے کسی خاص سورت کا پڑھنا لازم نہیں ہے، البتہ حمل  اور حاملہ کی حفاظت اور دیگر فوائد کے حصول کے بعض بزرگوں کے بیان کردہ وظائف درج ذیل ہیں:

1- حمل کے دروان  روزانہ سورۂ مریم کی تلاوت کرنا مفید ہے۔ 

2۔حمل کی حفاظت کے لیے {وَالشَّمْسِ وَضُحٰها} (پوری سورت) اجوائن اور کالی مرچ پر اکتالیس بار پڑھے اور ہر بار والشمس کے ساتھ درود شریف اور بسم اللہ پڑھے۔ اور دودھ چھوٹنے تک تھوڑی تھوڑی روزانہ حاملہ کوکھلائے۔

3۔ حفاظتِ حمل وبچہ:

{وَالَّتِي أَحْصَنَتْ فَرْجَهَا فَنَفَخْنَا فِيهَا مِنْ رُوحِنَا وَجَعَلْنَاهَا وَابْنَهَا آيَةً لِلْعَالَمِينَ () إِنَّ هَذِهِ أُمَّتُكُمْ أُمَّةً وَاحِدَةً وَأَنَا رَبُّكُمْ فَاعْبُدُونِ () وَتَقَطَّعُوا أَمْرَهُمْ بَيْنَهُمْ كُلٌّ إِلَيْنَا رَاجِعُونَ}

 حفاظتِ حمل اور بچہ صحیح وسالم پیدا ہونے کے لیے یہ آیتیں لکھ  کر شروع حمل میں چالیس روز تک حاملہ عورت کے باندھ دیں، پھر کھول کر نویں مہینے پھر باندھ دیں، پھر بعد پیدائش وہ تعویذ کھول کر بچہ کے باندھ دیں۔

4۔۔حفاظتِ حمل: سورۃ الحاقہ،  کو لکھ کر حاملہ کے باندھنے سے بچہ ہر آفت سے محفوظ رہے۔ فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144108201848

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں