بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

2 ربیع الاول 1442ھ- 20 اکتوبر 2020 ء

دارالافتاء

 

حمل کے دوران جینٹکس ٹیسٹ کرانا


سوال

 دوران زچگی جنیٹکس ٹیسٹ کروانا کیسا ہے؟

جواب

عورت کے حمل کے دوران اگر  ماہر ڈاکٹر کسی ضرورت یا بیماری کی جانچ کے لیے جینیٹکس ٹیسٹ کروانے  کی تجویز دے تو علاج معالجہ کی ضرورت کی وجہ سے یہ ٹیسٹ کروانا جائز ہوگا، لیکن  اس ٹیسٹ کی رپورٹ کی بنیاد پر حمل ساقط کرانا جائز نہیں ہوگا۔ فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144201201319

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں