بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

- 26 مئی 2020 ء

دارالافتاء

 

گناہ کی صورت میں نوافل کی نذز مانی پھر پڑھے نہیں


سوال

میں نے نیت کی تھی اگر مجھ سے فلاں گناہ ہو جائے گا تو میں فلاں رکعات(اتنی رکعات) نوافل پڑھوں گا، لیکن میں نے نہیں پڑھے، اب اس کا کفارہ کیا ہے؟

جواب

اگر زبان سے کچھ نہیں کہا تھا، صرف نیت کی تھی تو نوافل لازم نہیں ہیں، اور اگر زبان سے کہہ دیا تھا تو یہ نوافل ذمہ پر واجب ہیں، اب تک ادا  نہیں کیے تو اب ادا کرلیں۔ فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144109201132

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں

ہماری ایپلی کیشن ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے