بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

- 17 نومبر 2019 ء

دارالافتاء

 

غریب کا قربانی کرنا


سوال

ایک غریب آدمی تھا اس پر قربانی واجب نہ تھی، اس نے بڑے جانور میں قربانی کیلئے حصہ لیا۔ لیکن بعد میں اس نے پیسے واپس لے لیے اور وہ حصہ کسی اور مالدار کو دیا گیا جس پر قربانی واجب تھی۔ اس کے بعد جانور ذبح کیا گیا۔ اس پر دو سوال پوچھنے ہیں۔ ایک یہ کہ اس غریب کیلئے اب کیا حکم ہے؟ وہ پیسے اپنے پاس رکھ سکتا ہے یا صدقہ کردے؟ دوسرا سوال یہ کہ اس بڑے جانور میں سب حصہ داروں کی قربانی ہوگئی یا نہیں؟

جواب

صورت مسئولہ میں غریب آدمی پر ان پیسوں کو صدقہ کرنا واجب ہے۔ باقی ان سات حصہ داروں کی قربانی بھی درست ہے۔


فتوی نمبر : 143412200021

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاشں

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے یہاں کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے

سوال پوچھیں

ہماری ایپلی کیشن ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے