بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

11 رجب 1444ھ 03 فروری 2023 ء

دارالافتاء

 

گھر میں قبر پر کمرہ بنانا


سوال

کسی گھر کے اندر قبر ہو اور وہ اس قبر پر کمرہ بنانا چاہتے ہیں تو اس کے بارے میں کیا حکم ہے؟

جواب

گھر میں قبر بنانا جائز نہیں ہے۔ اگر کوئی قبر بنا ہی لی ہو تو اس پر کمرہ بنانا ناجائز ہے، قبر کی جگہ سے ہٹ کر کمرہ بنا لیا جائے۔  نیز ملحوظ رہے کہ انبیاء کرام علیہم السلام کی خصوصیت ہے کہ جہاں ان کی وفات ہو، وہیں ان کی قبر ہو جس کی ایک حکمت یہ ہے کہ لوگوں میں اختلاف نہ ہو۔

مرقاة المفاتيح شرح مشكاة المصابيح (3 / 1217):

"(وعن جابر قال: «نهى رسول الله صلى الله عليه وسلم أن يجصص القبر وأن يبنى عليه» ) قال في الأزهار: النهي عن تجصيص القبور للكراهة، وهو يتناول البناء بذلك وتجصيص وجهه، والنهي في البناء للكراهة إن كان في ملكه، وللحرمة في المقبرة المسبلة."

فقط والله اعلم


فتوی نمبر : 144204201008

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں