بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

18 ذو الحجة 1442ھ 29 جولائی 2021 ء

دارالافتاء

 

گھر کا کوئی فرد خود ذبح کرے تو اجرت کا کیا حکم ہوگا؟


سوال

اگر قربانی کا جانور گھر کے افراد میں سے کوئی ایک ذبح کرنا چاہے تو اس کی اجرت مسجد میں دینی چاہیے؟

جواب

صورتِ  مسئولہ میں گھر کے افراد میں سے کوئی اگر ذبح خود کرنا چاہے،  اور بقیہ افراد سے ذبح پر اجرت لینا چاہے تو  لے سکتا ہے، اور ایسی اجرت صدقہ کرنا یا مسجد میں دینا ضروری نہیں، اسی طرح سے اگر وہ بلا اجرت ذبح کرنے پر راضی ہو تو اجرت   لیے بغیر  بھی ذبح کرسکتا ہے، اس صورت میں بھی ذبح کی معروف اجرت  مسجد میں دینا لازمی نہیں ہے۔  فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144211201297

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں