بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

19 ربیع الاول 1443ھ 26 اکتوبر 2021 ء

دارالافتاء

 

گنجے آدمی کی امامت کا حکم


سوال

کیاگنجےآدمی کاامامت کروانا جائز ہے؟

جواب

گنجے آدمی کا نماز کی امامت کروانا جائز ہے اور ایسے شخص کے  پیچھے نماز بلا کراہت ادا ہوجاتی ہے۔ فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144210200567

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں