بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

11 صفر 1443ھ 19 ستمبر 2021 ء

دارالافتاء

 

گندے کپڑوں میں نماز کا حکم


سوال

ہماری جماعت میں مصری آتے ہیں اور گندے کپڑوں میں نماز پڑھتے ہیں، کیا ایسا جائز ہے؟

جواب

اگر کپڑے نجاست سے پاک ہوں، لیکن صفائی نہ ہونے کی وجہ سے گندے ہوں تو ایسے کپڑوں میں نماز پڑھنا مکروہ ہے۔  اور اگر  کپڑوں پر ناپاکی لگی ہو  اور وہ معاف مقدار سے زیادہ ہو تو ان میں نماز  ادا کرنا جائز نہیں ہے  اور اس سے نماز ادا نہیں ہوتی،  البتہ اگر کپڑوں پر معمولی نجاست ہو اور اس کے ساتھ نماز ادا کرلی تو نماز ادا ہوجاتی ہے۔ 

ناپاک کپڑوں میں نماز پڑھنے کا حکم

الفتاوى الهندية (1 / 107):

"وتكره الصلاة في ثياب البذلة، كذا في معراج الدراية."

فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144201201373

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں