بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

5 رجب 1444ھ 28 جنوری 2023 ء

دارالافتاء

 

گاہک کے کپڑے وصول نہ کرنے کی وجہ سے درزی کا وہ کپڑے خود کپڑے استعمال کرنے کا حکم


سوال

ایک شخص کی درزی کی دکان ہے جس پر گاہک کے کپڑے سلے ہوئے رکھے ہیں جو چار سال سے وصول نہیں کر رہا ہے، تو ایسے رکھے ہوئے کپڑوں کے بارے میں کیا خیال ہے کہ وہ درزی خود ا سے  خوداستعمال کرسکتا ہے یا نہیں؟

جواب

مذکورہ درزی کے لئے گاہک کے کپڑے خود استعمال کرنا جائز نہیں ہے، درزی کو چاہیئے کہ اس گاہک کے کپڑے سنبھال کر رکھے اور جب وہ آجائے تو اسے حوالہ کردے، اگر کپڑے سنبھال کر رکھنا مشکل ہے تو اسے بیچ کر اس کی قیمت کو حفاظت سے  رکھ لے اور گاہک کے آنے پر اسے وہ قیمت ادا کردے۔

فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144210200566

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں