بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

25 جمادى الاخرى 1441ھ- 20 فروری 2020 ء

دارالافتاء

 

فحش منظر بینی کرتے وقت نکلنے والے قطروں سے ناپاکی کا حکم


سوال

اگر کسی کو کوئی فلم وغیرہ یا کوئی فحش منظر دیکھ کر پیشاب کی نالی سے قطرے آجائیں تو اس ہر غسل واجب ہوگا یا نہیں، وہ قطرے گاڑھے اور سفید ھوتے ہوں؟

جواب

اگر یہ قطرے منی کے ہوں اور اچھل کر نکلیں تو غسل واجب ہوگا ورنہ نہیں، علامت یہ ہے کہ ان کے نکلنے کے بعد اگر خواہش ماند پڑجائے تو یہ منی کے قطرے ہیں ،اس صورت میں غسل واجب ہوگا اور اگر خواہش بڑھنے لگے تو پھر منی نہیں ہے، غسل واجب نہیں ۔ واللہ اعلم


فتوی نمبر : 143507200005

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاشں

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے یہاں کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے

سوال پوچھیں

ہماری ایپلی کیشن ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے