بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

23 ذو القعدة 1441ھ- 15 جولائی 2020 ء

دارالافتاء

 

فرعون کی لمبائی کتنی تھی؟


سوال

فر عون کی لمبائی کتنی تھی؟

جواب

’’فرعون‘‘  کے قد کے جاننے پر دینِ اسلام کا کوئی عقیدہ یا شریعت کا کوئی مسئلہ موقوف نہیں ہے، تارٰیخی روایات میں مختلف باتیں اس کے قد سے متعلق مذکور ہیں، کسی مسلمان کو یہ زیب نہیں دیتا کہ ایسی چیزوں میں بحث مباحثہ کرکے اپنا وقت ضائع کرے، اصل یہ ہے کہ: اس کے قصہ سے عبرت حاصل کرکے اللہ کو راضی کرنے والے کاموں میں اپنا وقت صرف کرے۔ جس چیز کو قرآن وحدیث نے مبہم رکھا ہے اس کی کھود کرید کی ضرورت نہیں،«أبهموا ما أبهمه الله».

بعض تاریخی روایات سے ایسا معلوم ہوتا ہے کہ فرعون کا قد زیادہ لمبا نہ تھا، بلکہ کافی پست تھا، حقیقتِ حال اللہ تعالیٰ کے علم میں ہے، تاہم مصر میں موجود مختلف فراعینِ مصر  کے ڈھانچوں سے اندازا ہوتاہے کہ ان کے قد غیر معمولی قامت کے حامل نہیں تھے، اور ان ڈھانچوں کی تاریخی حیثیت ثابت اور تسلیم شدہ ہے۔ فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144110200423

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں