بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

8 محرم 1446ھ 15 جولائی 2024 ء

دارالافتاء

 

فرشتوں کا مادۂ تخلیق


سوال

فرشتوں کی تخلیق کس چیز سے ہوئی؟

جواب

فرشتے لطیف اجسام ہیں  جن کو مختلف شکلیں اختیار کرنے کی قدرت اللہ کی طرف سے دی گئی ہے،ان کی تخلیق من جانب اللہ نور سے ہوئی ہے۔

فتح الباری میں ہے :

قال جمهور أهل الكلام من المسلمين الملائكة أجسام لطيفة أعطيت قدرة على التشكل بأشكال مختلفة ومسكنها السماوات وأبطل من قال إنها الكواكب أو إنها الأنفس الخيرة التي فارقت أجسادها وغير ذلك من الأقوال التي لا يوجد في الأدلة السمعية شيء منها وقد جاء في صفة الملائكة وكثرتهم أحاديث منها ما أخرجه مسلم عن عائشة مرفوعا خلقت الملائكة من نور الحديث 

(فتح الباری ،لابن حجر 6 / 376 ،ط: قدیمی )

صحیح مسلم میں ہے:

حدثنی محمد بن رافع وعبد بن حميد قال عبد: أخبرنا. وقال ابن رافع: حدثنا عبد الرزاق. أخبرنا معمر عن الزهري، عن عروة، عن عائشة، قالت:قال رسول الله صلى الله عليه وسلم "خلقت الملائكة من نور. وخلق الجان من مارج من نار. وخلق آدم مما وصف لكم

(صحیح مسلم ،ج:2،حدیث  نمبر : 7495، کتاب الزھد ،باب فیاحادیث متفرقہ ،ط:مکتبہ  رحمانیہ)

فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144508100852

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں