بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

3 ربیع الاول 1442ھ- 21 اکتوبر 2020 ء

دارالافتاء

 

فجر سے پہلے یا بعد میں قضا نماز پڑھنے کا حکم


سوال

 فجر کی نماز سے پہلے یا سنت کے بعد یا فرض نماز کے بعد قضا نماز پڑھ سکتے ہیں?

جواب

فجر  کی نماز سے پہلے یا فجر کی سنت پڑھنے کے بعد یا فجر کی نماز پڑھنے کے بعد سورج طلوع ہونے سے پہلے اگر کوئی قضا نماز پڑھنا چاہے تو پڑھ سکتا ہے، بلکہ تین اوقاتِ  مکروہہ (سورج طلوع ہونے سے لے کر اشراق کا وقت ہونے تک، استواءِ شمس یعنی دوپہر کے وقت سورج عین سر کے اوپر آنے کے وقت سے پانچ منٹ پہلے اور پانچ منٹ بعد  اور  عصر کے بعد سورج زرد پڑنے کے بعد سے لے کر غروبِ شمس تک) کے علاوہ کسی بھی وقت قضا نماز پڑھی جاسکتی ہے۔ فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144108201698

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں