بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

19 ربیع الثانی 1442ھ- 05 دسمبر 2020 ء

دارالافتاء

 

فجر کی نماز کے بعد سجدہ تلاوت کا حکم


سوال

فجر کی نماز کے بعد سجدہ تلاوت کرسکتے ہیں؟

جواب

نماز فجر کے بعد طلوعِ آفتاب سے پہلے تک سجدہ تلاوت کی ادائیگی درست ہے۔ البتہ عین طلوع کے وقت میں سجدۂ تلاوت جائز نہیں، الا یہ کہ اسی وقت آیتِ سجدہ کی تلاوت کی تو اس سجدہ تلاوت کی ادائیگی کی اجازت ہوگی۔

"فتاوی ہندیہ" میں ہے:

"(الفصل الثالث في بيان الأوقات التي لاتجوز فيها الصلاة وتكره فيها) ثلاث ساعات لاتجوز فيها المكتوبة ولا صلاة الجنازة ولا سجدة التلاوة: إذا طلعت الشمس حتى ترتفع وعند الانتصاف إلى أن تزول وعند احمرارها إلى أن يغيب إلا عصر يومه ذلك فإنه يجوز أداؤه عند الغروب." (2/257)

فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144203200854

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں