بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

15 ربیع الاول 1443ھ 22 اکتوبر 2021 ء

دارالافتاء

 

ایک ایصال ثواب کئی مرحومین کی طرف سے


سوال

اگر 100 روپے صدقہ دیا جائے تو کیا سب مرحومین کی نیت کی جاسکتی ہے کہ اللہ سب کو اس کا ثواب پہنچائے؟

جواب

صورتِ مسئولہ میں تمام مرحومین  کی نیت کی  جاسکتی ہے، اس سے ثواب میں مرحومین کے لیے اور پڑھنے والے کے لیے کمی نہیں ہوگی۔

شرح الصدور بشرح حال الموتى والقبور (ص: 303):

"وَأخرج أَبُو مُحَمَّد السَّمرقَنْدِي فِي فَضَائِل {قل هُوَ الله أحد} عَن عَليّ مَرْفُوعاً من مر على الْمَقَابِر وَقَرَأَ {قل هُوَ الله أحد} إِحْدَى عشرَة مرةً ثمَّ وهب أجره للأموات أعطي من الْأجر بِعَدَد الْأَمْوَات.
5 - وَأخرج أَبُو الْقَاسِم بن عَليّ الزنجاني فِي فَوَائده عَن أبي هُرَيْرَة قَالَ: قَالَ رَسُول الله صلى الله عَلَيْهِ وَسلم: من دخل الْمَقَابِر، ثمَّ قَرَأَ فَاتِحَة الْكتاب و {قل هُوَ الله أحد} و {أَلْهَاكُم التكاثر} ثمَّ قال: اللَّهُمَّ إِنِّي جعلت ثَوَاب مَا قَرَأت من كلامك لأهل الْمَقَابِر من الْمُؤمنِينَ وَالْمُؤْمِنَات كَانُوا شُفَعَاء لَهُ إِلَى الله تَعَالَى. 

 6 - وَأخرج القَاضِي أَبُو بكر بن عبد الْبَاقِي الْأنْصَارِيّ فِي مشيخته عَن سَلمَة بن عبيد قَالَ: قَالَ حَمَّاد الْمَكِّيّ: خرجت لَيْلَة إِلَى مَقَابِر مَكَّة، فَوضعت رَأْسِي على قبر فَنمت، فَرَأَيْت أهل الْمَقَابِر حَلقَةً حَلقَةً، فَقلت: قَامَت الْقِيَامَة، قَالُوا: لَا وَلَكِن رجل من إِخْوَاننَا قَرَأَ: {قل هُوَ الله أحد}، وَجعل ثَوَابهَا لنا فَنحْن نقتسمه مُنْذُ سنة.
7 - وَأخرج عبد الْعَزِيز صَاحب الْخلال بِسَنَدِهِ عَن أنس رَضِي الله عَنهُ أَن رَسُول الله صلى الله عَلَيْهِ وَسلم قَالَ: من دخل الْمَقَابِر فَقَرَأَ سُورَة يس خفف الله عَنْهُم، وَكَانَ لَهُ بِعَدَد من فِيهَا حَسَنَات". 

 فقط واللہ اعلم



فتوی نمبر : 144203200849

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں