بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

11 صفر 1443ھ 19 ستمبر 2021 ء

دارالافتاء

 

دودھ پیتے بچے کا جوٹھا


سوال

دودھ پیتے بچے کا جھوٹا پاک ہے یا ناپاک؟

جواب

دودھ پیتے بچے کا جوٹھا پاک ہے، لہذا   اگر دودھ پینے والا بچہ پانی پی سکتا ہو یا کھانا کھاسکتا ہو  اور اس نے دودھ پینے کے دوران پانی پی لیا یا برتن میں کھالیا  تو اسی گلاس سے اور اسی برتن   سے کھانا پینا  جائز ہے، اس کے ناجائز ہونے کی کوئی وجہ نہیں ہے۔

   اگر  بالفرض گلاس میں بچہ کے منہ سے دودھ لگ گیا ہو تو ایسی صورت میں اس دودھ والی جگہ سے نہ پیے، اگر غلطی سے دودھ منہ میں آجائے تو اس کو تھوک دے۔ فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144211201096

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں