بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

13 جُمادى الأولى 1444ھ 08 دسمبر 2022 ء

دارالافتاء

 

گائے کا ایک تھن نہ ہو تو قربانی کا حکم


سوال

بڑی گائے / بھینس جس کا ایک تھن پیدائشی نہ ہو کیا اس کی قربانی جائز ہے؟

جواب

گائے یا بھینس کا ایک تھن نہ ہو تو اس کی قربانی جائز ہے، البتہ اگر دو یا اس سے زائد تھن نہ ہوں تو پھر قربانی جائز نہیں ہوگی۔

فتاوی شامی میں ہے:

وفي الشاة والمعز إذا لم يكن لهما إحدى حلمتيهما خلقة أو ذهبت بآفة وبقيت واحدة لم يجز، وفي الإبل والبقر إن ذهبت واحدة يجوز أو اثنتان لا۔(6/324)

فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144212200318

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں