بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

- 26 مئی 2020 ء

دارالافتاء

 

چودہ تولہ سونے پر زکاۃ


سوال

 14 تولہ سونے پر کتنی زکاۃ ہوگی؟

جواب

صورتِ مسئولہ میں چودہ تولہ سونے کی قیمت معلوم کرکے کل قیمت کا چالیسواں حصہ ( ڈھائی فیصد) بطورِ زکاۃ ادا کردیجیے۔

واضح رہے کہ سونا اگر نصاب یا اس سے زیادہ موجود ہو تو اصل یہ ہے کہ اس سونے کے مجموعی وزن میں سے ڈھائی فی صد (چالیسواں حصہ) زکاۃ میں ادا کیا جائے، دوسری صورت یہ ہے کہ چالیسویں حصے میں جو وزن آئے اس کی قیمت زکاۃ میں ادا کردی جائے۔ اور چودہ تولہ سونا نصابِ زکاۃ سے زیادہ ہے، لہٰذا چودہ تولے کا وزن معلوم کیا جائے، اور مجموعی وزن کو چالیس سے تقسیم کردیا جائے، حاصل جواب اتنا وزن ہوگا جو زکاۃ میں ادا کرنے کی مقدار ہوگی، اس وزن کی قیمت ادا کرکے زکاۃ ادا کی جاسکتی ہے۔

ایک تولہ کا وزن گرام کے اعتبار سے(11.6638038 grams) ہے، اور چودہ (14) تولے کا مجموعی وزن گرام کے اعتبار سے(163.29324gm) ہوگا، اسے چالیس سے تقسیم کیا جائے تو  حاصل جواب (4.082331gm) وزن ہوگا، لہٰذا چودہ تولہ سونے کی زکاۃ اصل میں یہ ہوگی۔ البتہ سونے میں سے اتنی مقدار توڑ کر دینا عموماً مشکل ہوتاہے، لہٰذا مجموعی طور پر چودہ تولہ سونے کی قیمت معلوم کرکے، اس قیمت کو چالیس سے تقسیم کردیا جائے، حاصل جواب زکاۃ کی واجب مقدار ہوگی۔ فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144108201052

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں

ہماری ایپلی کیشن ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے