بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

8 شوال 1445ھ 17 اپریل 2024 ء

دارالافتاء

 

چلتے پھرتے/ بے وضو درود پڑھنا/ افضل اورآسان درود شریف کی تعیین


سوال

1- درود شریف چلتے پھرتے پڑھ سکتے ہیں؟ اورکیادرود کے لیے وضو ضروری ہے؟

2- افضل اور آسان درود شریف کون سا ہے؟

جواب

درودشریف اور تمام اذکارواوراد چلتے پھرتے اور بے وضو پڑھے جاسکتے ہیں، اس کے لیےوضوکرنا لازم نہیں ہے۔

2- سب سے افضل درود شریف  درودِ ابراہیمی ہے،جوکہ  نماز میں تشہد کے بعد پڑھا جاتا ہے، اور   آسان درود شریف:اَللّٰھُمَّ صَلِّ عَلٰى سَیِّدِنَا وَ مَوْلَانَا مُحَمَّدٍ وَّ عَلٰى آلِهٖ وَ أَصْحَابِهٖ وَ بَارِكْ وَ سَلِّمْ،اور  صَلَّى اللّٰهُ عَلَيْهِ وَ سَلَّم  ہے۔

 بخاری شریف  میں ہے:

"حدثنا ‌‌قيس ‌بن ‌حفص ‌‌وموسى ‌بن ‌إسماعيل ‌قالا ‌حدثنا ‌‌عبد ‌الواحد ‌بن ‌زياد ‌حدثنا ‌‌أبو ‌قرة ‌مسلم ‌بن ‌سالم ‌الهمداني ‌قال ‌حدثني ‌‌عبد ‌الله بن عيسى سمع ‌عبد الرحمن بن أبي ليلى قال لقيني ‌كعب بن عجرة فقال «ألا أهدي لك هدية سمعتها من النبي صلى الله عليه وسلم فقلت بلى فأهدها لي فقال سألنا رسول الله صلى الله عليه وسلم فقلنا يا رسول الله كيف الصلاة عليكم أهل البيت فإن الله قد علمنا كيف نسلم عليكم قال قولوا اللهم صل على محمد وعلى آل محمد كما صليت على إبراهيم وعلى آل إبراهيم إنك حميد مجيد اللهم بارك على محمد وعلى آل محمد كما باركت على إبراهيم وعلى آل إبراهيم إنك حميد مجيد.»."

(كتاب أحاديث الأنبياء، ١٤٦/٤، ط:دار طوق النجاة)

القول البدیع فی الصلاۃ علی الحبیب الشفیع میں علامہ سخاوی رحمہ اللہ نے لکھاہے:

"استدل بتعليمه - صلى الله عليه وسلم - لأصحابه كيفية الصلاة عليه بعد سؤالهم عنها أفضل الكيفيات في الصلاة عليه لأنه لا يختار لنفيه إلا الأشرف والأفضل."

(الباب الأول،٦٥، ط:دار الريان للتراث)

آپ کے مسائل اور ان کاحل میں ہے:

"سب سے افضل درود شریف تو وہ ہے جو نماز میں پڑھاجاتاہے، اور مختصر درود شریف یہ بھی ہے: اَللّٰھُمَّ صَلِّ عَلٰى سَیِّدِنَا وَ مَوْلَانَا مُحَمَّدٍ وَّ عَلٰى آلِهٖ وَ أَصْحَابِهٖ وَ بَارِكْ وَ سَلِّمْ"

(آپ کے مسائل اور ان کا حل، ص:510،ج:3)

فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144504102195

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں