بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

- 27 مئی 2020 ء

دارالافتاء

 

دودھ کے اضافے کے لیے بھینسوں کو انجیکشن لگانا


سوال

بوسٹن انجیکشن بھینسوں کو لگایا جاتا ہے، شاید اس کے مضر اثرات کی وجہ سے حکومت نے اس پر پاکستان میں پابندی لگائی ہوئی  ہے، لیکن پھر بھی لوگ چوری چھپے اس کو دودھ کو بڑھانے کے لیے لگاتے ہیں. معلوم یہ کرناہے کہ وہ انجیکشن جس کے مضر اثرات کی بنا پر حکومت کی جانب سے پابندی ہو، اس کا بھینسوں کو لگانا شرعاً کیا حکم رکھتا ہے؟  اور اس کی تجارت کا شرعاً  کیا حکم ہوگا جو کہ غیر قانونی بھی ہے؟

جواب

حکومت نے مذکورہ انجیکشن پر سخت مضر صحت ہونے کی وجہ سے پابندی لگائی ہوئی ہے، لہذا مضر صحت ہونے اور ملکی قوانین میں ممنوع ہونے کی وجہ سے بھینسوں کو یہ انجیکشن لگانے اور اس کے کاروبار  سے احتراز کرنا واجب ہے اور خلاف ورزی کرنا گناہ ہے ۔فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144109200588

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں

ہماری ایپلی کیشن ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے