بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

23 شوال 1443ھ 25 مئی 2022 ء

دارالافتاء

 

بے چینی کا وظیفہ


سوال

بندہ کافی عرصہ سے ذہنی طور بے چین ہے، کوئی علاج یا وظیفہ  بتادیں!

جواب

صورتِ مسئولہ میں اگر والدین، بیوی، اولاد یا اساتذہ میں سے کسی کی حق تلفی ہوئی ہے تو اس کا ازالہ کریں، بے چینی دور ہوجائے گی، اگر خود احتسابی کے باوجود ایسی کوئی بات سمجھ میں نہ آئے تو درج ذیل معمولات ان شاء اللہ تسکینِ قلب کا وسیلہ ثابت ہوں گے:

(1) درود شریف کی کثرت۔

(2) ہر نماز کے بعد  آیت الکرسی پڑھنے اور سر پر ہاتھ رکھ کر گیارہ مرتبہ’’یا قوی‘‘  پڑھنے کا اہتمام۔

(3) صبح و شام درج ذیل دعا پڑھنے کا اہتمام:

"اَللّٰهُمَّ إِنِّيْ أَعُوْذُبِكَ مِنَ الْهَمِّ وَالْحَزَنِ، وَ أَعُوْذُبِكَ مِنَ الْعَجْزِ وَ الْکَسْلِ، وَأَعُوْذُبِكَ مِنَ الْجُبْنِ وَ الْبُخْلِ، وَأَعُوْذُبِكَ مِنْ غَلَبَةِ الدَّیْنِ وَقَهْرِ الرِّجَالِ". 

فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144205200499

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں