بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

13 ذو الحجة 1445ھ 20 جون 2024 ء

دارالافتاء

 

بارہ تولہ سونے پر واجب الادا زکات کی مقدار


سوال

بارہ تولہ سونے پر کتنی زکات واجب الادا ہے،اور کیا گاڑی اور ذاتی  استعمال کے موبائل فونز پر بھی زکات ادا کرنا واجب  ہے؟

جواب

آپ زکات کی ادائیگی کے وقت بارہ تولہ سونا کی کل مالیت معلوم کرلیں، بارہ تولہ سونے کی کل مالیت کا ڈھائی فیصد (چالیسواں حصہ) کے بقدر رقم زکات میں دینا لازم ہوگا۔ البتہ   گاڑی اور  موبائل فون جو تجارت (بیچ کر نفع کمانے) کی نیت سے نہ خریدے ہوں، ان  پر زکات واجب نہیں ہے۔

الدر المختار وحاشية ابن عابدين (رد المحتار) (2/ 295):

’’باب زكاة المال أل فيه للمعهود في حديث «هاتوا ربع عشر أموالكم» فإن المراد به غير السائمة لأن زكاتها غير مقدرة به. (نصاب الذهب عشرون مثقالا والفضة مائتا درهم) ۔۔۔۔۔۔ (واللازم) مبتدأ (في مضروب كل) منهما (ومعموله ولو تبرا أو حليا مطلقا) مباح الاستعمال أو لا ولو للتجمل والنفقة؛ لأنهما خلقا أثمانا فيزكيهما كيف كانا (أو) في (عرض تجارة قيمته نصاب) الجملة صفة عرض وهو هنا ما ليس بنقد. ۔۔۔۔۔۔۔۔ (ربع عشر) خبر قوله اللازم‘‘.

فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144209201275

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں