بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

15 محرم 1446ھ 22 جولائی 2024 ء

دارالافتاء

 

بینک سے قسطوں پر گاڑی خریدنے کا حکم


سوال

میں ایک گورنمنٹ ملازم ہوں اور میں بینک سے ایک گاڑی لینا چاہتا ہوں، جو قسطوں پر دیتا ہے اور ماہانہ  قسط بینک میری تنخواہ سے خود کاٹے گا۔ کیا یہ کام میرے لیے جائز ہے یا نہیں؟

جواب

قسطوں پر خرید و فروخت فی نفسہ تو  جائز ہے، لیکن  اس کے جائز ہونے کی جو شرائط ہیں موجودہ بینک  اُن شرائط  کی پاس داری نہیں کرتے؛  اس لیے بینک سے قسطوں پر گاڑی خریدنا جائز  نہیں ہے۔

مزید تفصیل کے لیے درج ذیل فتویٰ ملاحظہ فرما سکتے ہیں:

بینک سے قسطوں پر گاڑی لینے کے جائز نہ ہونے کی وجہ

فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144203200623

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں