بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

20 ذو الحجة 1442ھ 31 جولائی 2021 ء

دارالافتاء

 

بینک میں اکاؤنٹ کھلوانا


سوال

کون سے بینک میں اکاؤنٹ کھلوانا جائز ہے ؟

جواب

بلاضرورت   کسی بھی بینک میں  کسی قسم کا اکاؤنٹ نہیں کھولنا چاہیے، اگر مجبوری ہو تو  کسی بھی بینک میں صرف کرنٹ اکاؤنٹ  کھلوانے کی اجازت ہے، اس کے لیے تمام بینک برابر ہیں ، اس سے بھی زیادہ بہتر یہ ہے کہ بوقتِ ضرورت بینک میں لاکر خرید کر اس کا کرایہ ادا کیا جائے اور وہاں اپنی رقم یا مال محفوظ رکھا جائے۔ بہرحال منافع بخش اکاؤنٹ کسی بھی بینک میں کھولنا شرعًا جائز نہیں ہے۔ فقط واللہ اعلم 


فتوی نمبر : 144207200746

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں