بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

20 صفر 1443ھ 28 ستمبر 2021 ء

دارالافتاء

 

بالوں پر کالا خضاب لگانا


سوال

میری داڑھی کے زیادہ تر بال سفید ہیں، جب کہ سر کے بال کالے اور سفید ہیں، کیا میں ان کو کالا رنگ کر سکتا ہوں؟ میں نے کبھی مہندی لگانے کے لیے نہیں سوچا ہے۔ کیا کوئی گنجائش ہے؟

جواب

 عام حالات میں سفید  بالوں کو سیاہ کرنے کے لیے کالا خضاب لگانا  جائز نہیں، صرف حالتِ جہاد میں دشمن کو مرعوب رکھنے اور اس کے سامنے جوانی اور طاقت کے اظہار کے لیے کالا خضاب استعمال کرنے کی  اجازت دی گئی ہے، احادیث میں اس کی ممانعت آئی ہے۔ البتہ کالے  رنگ کے علاوہ کسی اور  رنگ (مثلًا، سرخ یا بھورا   یا  سیاہی مائل رنگ)  کا خضاب لگانا جائز ہے۔

الفتاوى الهندية (5/ 359):

"اتفق المشايخ رحمهم الله تعالى أن الخضاب في حق الرجال بالحمرة سنة، و أنه من سيماء المسلمين وعلاماتهم، وأما الخضاب بالسواد فمن فعل ذلك من الغزاة؛ ليكون أهيب في عين العدو فهو محمود منه، اتفق عليه المشايخ رحمهم الله تعالى، ومن فعل ذلك ليزين نفسه للنساء وليحبب نفسه إليهن فذلك مكروه، وعليه عامة المشايخ."

مزید تفصیل کے لیے فتوی

اپنی بیوی کے لیے کالا خضاب لگانے کا حکم ملاحظہ فرمائیں 

فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144204200800

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں