بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

7 رجب 1444ھ 30 جنوری 2023 ء

دارالافتاء

 

بغیر وضو درود شریف پڑھنا


سوال

کیا وضو کے بغیر درود شریف پڑھ سکتے ہیں؟

جواب

 وضو  کے بغیر  درود شریف پڑھنا جائز ہے، البتہ درود شریف  باوضو پڑھنا  افضل ہے،  چوں کہ ہر وقت چلتے  پھرتے، اٹھتے بیٹھتے  بھی درود شریف پڑھناسعادت اور برکت کا باعث ہے، اس لیے  اگر کسی وقت وضو نہ ہو تو  بھی  وضو کے  بغیر درود شریف پڑھ سکتے ہیں ۔

فتاوی شامی میں ہے:

"(ولا بأس) لحائض وجنب (بقراءة أدعية ومسها وحملها وذكر الله تعالى، وتسبيح).

"(قوله: ولا بأس) يشير إلى أن وضوء الجنب لهذه الأشياء مستحب كوضوء المحدث،  وقد تقدم ح أي لأن ما لا بأس فيه يستحب خلافه."

(كتاب الطهارة، باب الحيض ،ج: 1، ص: 293، ط: سعيد)

فقط والله اعلم


فتوی نمبر : 144405100015

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں