بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

3 ذو الحجة 1443ھ 03 جولائی 2022 ء

دارالافتاء

 

اذان سے قبل سنتِ مؤکدہ ادا کرنا


سوال

اذان  سے  پہلے سنتِ  مؤکدہ  پڑھ  سکتے  ہیں  کہ  نہیں ؟

جواب

صورتِ  مسئولہ  میں نماز کا وقت داخل ہوجانے کے بعد سنتِ  مؤکدہ ادا کرسکتے ہیں، خواہ اذان ہوئی ہو یا نہ ہوئی ہو، البتہ جن ممالک میں نماز کا وقت داخل ہونے کے  ساتھ  ہی اذان کہی جاتی ہے، ایسی جگہوں میں اذان کے بعد  ہی سنتِ  مؤکدہ ادا کرنے کی اجازت ہوگی،  وقت سے قبل ادا کردہ نماز نفل شمار ہوگی، وقتی سنتِ مؤکدہ شمار نہ ہوگی۔ فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144210200737

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں