بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

17 محرم 1446ھ 24 جولائی 2024 ء

دارالافتاء

 

عقیقہ کے بعد نومود کے بال کاٹنے کا حکم


سوال

بچے کی پیدائش کے بعد عقیقہ میں بال کاٹنے کا کیا حکم ہے؟

جواب

 صورتِ  مسئولہ میں بچہ کے پیدائش کے ساتویں دن عقیقہ کرکے بچے کے بالوں کا حلق کرنا اور بالوں کے وزن کے بقدر چاندی صدقہ کرنا  مستحب ہے۔

فتاوی شامی میں ہے:

"يستحب لمن ولد له ولد أن يسميه يوم أسبوعه ويحلق رأسه ويتصدق عند الأئمة الثلاثة بزنة شعره فضة أو ذهبا ثم يعق عند الحلق عقيقة إباحة على ما في الجامع المحبوبي، أو تطوعا على ما في شرح الطحاوي".

(كتاب الاضحية، خاتمة، ج:6، ص:336، ط:ايج ايم سعيد) 

فقط والله اعلم 


فتوی نمبر : 144407101066

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں