بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

7 رجب 1444ھ 30 جنوری 2023 ء

دارالافتاء

 

عقیقہ میں بیل ذبح کرنے کا حکم


سوال

عقیقہ کے  لیے بیل ذبح کیا جا سکتا ہے یا نہیں؟ اس کی عمر کتنی ہونی چاہیے؟

جواب

صورتِ مسئولہ میں عقیقہ میں بیل ذبح کرنا شرعا درست ہے۔

الموسوعۃ الفقہیۃ میں ہے:

"يجزئ في العقيقة الجنس الذي يجزئ في الأضحية، وهو الأنعام من إبل وبقر وغنم، ولا يجزئ غيرها، وهذا متفق عليه بين الحنفية، والشافعية والحنابلة، وهو أرجح القولين عند المالكية."

[ج:30، ص:279،ط:دار السلاسل.]

فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144403100028

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں