بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

28 رمضان 1442ھ 11 مئی 2021 ء

دارالافتاء

 

اپنے بچوں کو زکوۃ دینےکا حکم


سوال

کیا زکوۃ  اپنی ہی اولاد  کو دے سکتے ہیں؟

جواب

بصورتِ  مسئولہ اپنے بچوں کو  زکوٰۃ دینا جائز نہیں ہے، بچے خواہ بالغ ہوں یا نابالغ، اگر اپنی اولاد کو  زکوٰۃ دی تو  زکاۃ ادا نہیں ہوگی۔

فتاوی شامی  میں ہے:

"(قوله: وإلى من بينهما ولاد) أي بينه وبين المدفوع إليه؛ لأن منافع الأملاك بينهم متصلة فلايتحقق التمليك على الكمال هداية والولاد بالكسر مصدر ولدت المرأة ولادةً وولادًا مغرب أي أصله وإن علا كأبويه وأجداده وجداته من قبلهما وفرعه وإن سفل بفتح الفاء من باب طلب والضم خطأ؛ لأنه من السفالة وهي الخساسة مغرب كأولاد الأولاد".

(کتاب الزکوۃ ، ج:2، ص: 346، ط: ایچ ایم سعید)

فقط والله أعلم


فتوی نمبر : 144209200942

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں